9 سال بعد خیبرپختونخوا میں سجنے والی نیشنل گیمز دھرنے کی نظر 25

9 سال بعد خیبرپختونخوا میں سجنے والی نیشنل گیمز دھرنے کی نظر


پشاور:پشاور میں33ویں نیشنل گیمز کا آغاز 26اکتوبرکو ہونا تھا،نیشنل گیمز اب 9 نومبر سے 14 نومبر کو منعقد کیے جائے گے،خیبرپختونخوا میں نو سال بعد سجنے والا قومی کھیلوں کا میلہ جمعیت علمائے السلام ف کے دھرنے کے پیش نظر ملتوی کر لیا گیاصوبائی حکومت کے وزیر اطلاعات شوکت یوسفزئی کے مطابق پشاور میں منعقد ہونے والی قومی کھیلوں کو سیاسی دھرنوں کی وجہ سے موخر کر دیا گیاہے فیصلہ گزشتہ روزپشاور گورنر ہاوس میں ہونے والے ایپکس کمیٹی کے اجلاس میں کیا گیا نیشنل گیمز اب 9 نومبر سے 14 نومبر کو منعقد کیے جائے گے ان کا کہنا تھا کہ صوبائی حکومت کی جانب سے اولمپکس ایسوسی ایشنزکو بھی آگاہ کر دیا گیا ہے صوبائی وزیر کا مزید کہناتھا کہ صوبائی حکومت خیبر پختونخوا کو اب کھیلوں کا حب بنتے دیکھ رہی ہے اور سپورٹس کے فروغ کے لیے کوشاں رہے گے واضح رہے کہ خیبر پختونخوا میں 9 سال بعد تینتیس ویں نیشنل گیمز منعقد ہونے جا رہی تھی جس میں چاروں صوبوں سمیت آزاد کشمیر اور گلگت بلتستان کے نو ہزار آٹھ سو کھلاڑیوں نے حصہ لینا تھا جبکہ نیشنل گیمز میں مرد تینتیس اور خواتین نے ستائیس ایونٹس میں اپنے جوہر دکھانے تھے جبکہ صوبائی حکومت کی جانب سے قومی کھیلوں کے مقابلوں کے لیے ٹارٹن ٹریک اور دیگر تزیین آرائش کا کام بھی شروع کر دیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

جواب دیجئے