کورونا وائرس کے مریضوں کیساتھ سیلفی پر 6 سرکاری ملازمین معطل 203

کورونا وائرس کے مریضوں کیساتھ سیلفی پر 6 سرکاری ملازمین معطل

سکھر: سندھ کے قرنطینہ سینٹر میں کورونا وائرس کے مریضوں کے ساتھ سیلفی پر 6 سرکاری ملازمین کو معطل کردیا گیا۔

عالمی خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق پاکستان کے شہر سکھر میں واقع حکومت سندھ کے قرنطینہ سینٹر میں کورونا وائرس کے 399 مریض موجود ہیں جہاں 6 سرکاری ملازم نے ان میں سے چند مریضوں کے ساتھ تصاویر بنائیں اور سوشل میڈیا پر شیئر بھی کیں۔

سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ان تصاویر میں دیکھا جاسکتا ہے کہ یہ سرکاری ملازمیں مریضوں کی جھرمٹ میں موجود ہیں اور سیلفی بنا رہے ہیں مریضوں کے چہروں پر ماسک بھی ہیں اور مریض بھی اپنی مرضی سے تصاویر بنوارہے ہیں۔

اے ایف پی سے بات کرتے ہوئے ڈپٹی کمشنر سکھر رانا عدیل نے بتایا کہ سوشل میڈیا پر تصاویر کے وائرل ہونے پر معاملے کی سنگینی کا احساس ہوا اور ان 6 ملازمین کو غفلت برتنے اور لوگوں کی جانیں خطرے میں ڈالنے پر معطل کردیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ پاکستان میں کورونا وائرس کے مریضوں کی تعداد 932 ہوگئی ہے جن میں سے 480 سندھ میں ہیں جب کہ ملک میں کورونا وائرس کی وجہ سے ہلاک ہونے والوں کی تعداد 7 ہوگئی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں