پشاور کی ایک مسجد سے کم عمر طالب علم کی لاش برآمد 221

پشاور کی ایک مسجد سے کم عمر طالب علم کی لاش برآمد

پشاور کی ایک مسجد میں کم عمر طالب علم کی لاش برآمد ہو گئی۔

اطلاعات کے مطابق واقعہ تھانہ یکہ توت کی حدود میں پیش آیا ہے جہاں رشید گڑھی نامی علاقے کی ایک مسجد سے تیرہ چودہ سالہ طالبعلم کی لاش برآمد ہوئی ہے جسے گلے میں رسی ڈال کر قتل کیا گیا تھا، بچے کا تعلق خضدار سے بتایا جاتا ہے جو نہایت ہی کم عمری سے اسی مدرسہ میں زیرتعلیم اور گذشتہ پانچ سال سے گھر بھی نہیں گیا تھا۔

ٹی این این کے ستھ گفتگو میں اس حوالے سے مقامی ذرائع نے بتایا کہ مسجد کے پیش امام کو قتل کی واردات چھپانے کے الزام میں گرفتار کر لیا گیا ہے، ذرائع کے مطابق پیش امام نے فوری طور پر سوزوکی گاڑی کا بندوبست بھی کر لیا تھا اور چار پانچ طلبہ کو لاش سمیت وہاں سے نکلنے کا کہہ دیا تھا۔

ذرائع نے مزید بتایا کہ مقامی بچوں میں کسی نے پیش امام کو طالب علم کو کپڑے پہناتے دیکھ لیا تھا اور اسی نے تھانہ جا کر پولیس کو اطلاع دی ہے جس کے بعد کارروائی عمل میں لائی گئی۔ ذرائع کے مطابق اس سوزوکی گاڑی کو بھی راستے میں روک لیا گیا اور بچے کی نعش ہسپتال منتقل کر دی گئی ہے۔

پولیس کی جانب سے واقعہ سے متعلق تفصیلات آنے پر اصل صورتحال واضح ہو سکے گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں