مریم نواز کی پارٹی گرل کے انداز میں عمران خان پر تنقید 54

مریم نواز کی پارٹی گرل کے انداز میں عمران خان پر تنقید

لاہور: مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز کا کہنا تھا کہ یہ دھند ہے، یہ عوام اور یہاں عمران خان کی چوری پکڑی گئی۔

ڈسکہ آلو مہار میں کارکنان سے خطاب کرتے ہوئے مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز کا کہنا تھا کہ یہاں ضمنی انتخابات میں ناصرف مسلم لیگ کا شیر 21 سالہ ذیشان حکمرانوں کی سیٹ کی لالچ کی نظر ہوگیا، بلکہ خود پی ٹی آئی کا ایک کارکن ان کی اپنی غنڈہ گردی کی بھینت چڑھ گیا، اگر مجھے مجھے پتا ہوتا کہ یہ سیٹ کی خاطر جانیں لیں گے تو صدقہ سمجھ کر یہ سیٹیں ان کو دے دیتی۔

مریم نواز کاکہنا تھا کہ ڈسکہ نے ثابت کردیا کہ جب عوام جاگ رہے ہوتے ہیں تو کسی ووٹ چور اور ڈاکو کی ترکیب کام نہیں آتی، ان کو پتا تھا شیروں نے ڈسکہ میں ان کی ضمانتیں ضبط کروا دینی ہے، حکومت نے سیٹ کے لئے کیا حربہ نہیں استعمال کیا، الیکشن سے پہلے ڈی پی او اور دیگر افسر اپنی مرضی کے لگائے، الیکشن ڈے پر فائرنگ کرکے خوف وہراس پھیلایا گیا۔
لیگی رہنما نے کہا کہ فائرنگ سے ہمارے کارکنان نے خوف کا شکار ہونے سے انکار کیا تو پولنگ کو سلو کروا دیا گیا، پولنگ اسٹیشن کے دروازے فائرنگ کے بہانے بند کر دئیے گئے، اس کے بعد ووٹوں کے تھیلے لے کر پتلی گلی بھاگے لیکن ہمارے کارکنان نے 2018 کی طرح اپنے ووٹ کو چوری نہیں ہونے دینا، اور ووٹ چوروں کو بھاگتے پکڑا۔

مریم نواز کا کہنا تھا کہ حلقے میں ری کاونٹنگ میں 300 ووٹ جعلی نکلا، جھوٹے ترجمانوں کو سمجھ نہیں آ رہی اس جھوٹ کو کیسے چھپائیں، دور اندیشوں کو دھند نظر آتی ہے، یہ دھند ہے یہ عوام اور یہاں عمران خان کی چوری پکڑی گئی، یہ نواز شریف ہے یہ عوام کی طاقت اور یہ اس کا بیانیہ ووٹ کو عزت دو جو سر چڑھ کر بول رہا ہے، چور چور کا نعرہ لگانے والے رنگے ہاتھوں پکڑے گئے، عوام کو پتا چل گیا اصل چور کون ہے، انہوں نے عوام کا آٹا، گیس، بجلی، دوائیاں اور ووٹ اور بکسے تو چوری کیے، پہلی بار الیکشن کمیشن کا عملہ بھی چوری کرلیا، عمران خان کہیں الیکشن کمیشن سے یہ درخواست نہ کردیں کہ اگلا الیکشن دھند میں کروائیں۔

لیگی رہنما نے کہا کہ الیکشن کمیشن سے درخواست ہے 22 کروڑ عوام کی نظریں آپ پر ہیں، عوام نے آپ کو ووٹ کے تقدس کا محافظ بنایا ہے، آپ نے ووٹ چوری پکڑ لی، اب ان پر ایف آئی آر درج کروائیں، اور پورے حلقے میں ری الیکشن کروائیں جائیں ری پولنگ تب تک نہ کروائی جائیں جب تک ووٹ چوری نہ ہونے کی یقین دہائی کرائی جائیں۔

اس سے قبل جاتی امرا میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز کا کہنا تھا کہ ڈسکہ کےعوام نےجمہوریت کی جنگ لڑی، ووٹ کو عزت دی، عوام نے آٹا اور چینی چوروں کو مسترد کردیا، ان کو عوام میں اپنے مقام کا پتا چل جانا چاہیے۔

مریم نواز کا کہنا تھا کہ ضمنی انتخابات میں حکمران بے نقاب ہوگئے، عوام کو سمجھ آگئی کہ 2018 میں ان کے ووٹ کیسے چوری کئے گئے، اور کس طرح انتخابات 2018 میں ڈاکا ڈال کر عمران خان کو مسلط کیاگیا، ضمنی انتخابت میں انہوں نے فائرنگ کرائی اور دو جانیں لیں، کچھ نہ ملا تو پریزائیڈنگ آفیسر کو اغوا کیاگیا، کیوں کہ انہوں نے بکنے سے انکار کردیا تھا، 20 پولنگ اسٹیشنز پر رزلٹ تبدیل کیاگیا، حکومت تمام ہتھکنڈوں کےباوجودڈسکہ میں ہاری، اگرپتہ ہوتاہےحکومت نے دوجانیں لینی ہیں تو ڈسکہ کی سیٹ ویسے ہی دے دیتے۔

لیگی رہنما نے کہا کہ چاروں صوبوں کے عوام نے حکمرانوں کو بری طرح مسترد کردیا، ریاستی دہشت گردی کےباوجود مخالف بری طرح ہار گئے، عوام نے بدترین دھاندلی کےباوجود حکمرانوں کو اوقات یاد دلادی، پی ٹی آئی کابہت جلدشیرازہ بکھرنےوالاہے، کاکوئی مستقبل نہیں رہا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں