لاوارث شہرڈیرہ: بجلی و گیس کی شدید لوڈ شیڈنگ کا شکار

لاوارث شہرڈیرہ: بجلی و گیس کی شدید لوڈ شیڈنگ کا شکار

ڈیرہ اسماعیل خان(ابوالمعظم ترابی)لاوارث و بے آسرا ڈیرہ بجلی و گیس کی شدید لوڈ شیڈنگ کا شکار بنا لیا گیا۔

کوئی پوچھنے والا نہیں۔صارفین کا کہنا ہے کہ ڈیرہ اسماعیل خان ڈویژن میں بجلی کی لوڈ شیڈنگ اس قدر شدید ہو گئی ہے کہ چوبیس گھنٹوں کے دوران صرف چھے گھنٹے بجلی ہوتی ہے۔دو گھنٹے بجلی بند اور ایک گھنٹہ بمشکل فراہم کی جاتی ہے۔شیڈول کے بجائے مختلف حیلے بہانوں سے کئی کئی گھنٹے بجلی کی بندش روزانہ کا معمول بن چکی ہے۔

کبھی تیکنیکی خرابی،کبھی مرمت اور کبھی پرمٹ کے نام پر اڈے کاٹ دیے جاتے ہیں۔گھریلو زندگی وبال اور تجارتی و کاروباری سرگرمیاں ماند پڑ چکی ہیں۔بجلی سے چلنے والے کاروبار ٹھپ اور کاری گر و مزدور بےروزگاری کا شکار ہو چکے ہیں۔صارفین نے بتایا کہ پورا مہینہ بجلی نہیں ہوتی اور بھاری بلوں کے ساتھ ناجائز جرمانے بھی عائد کر دیے جاتے ہیں۔

ناحق جرمانوں کے خلاف پیسکو حکام فریاد کی شنوائی کرتے ہیں نہ ہی صارف عدالت اور وفاقی محتسب کے فیصلوں کا پاس رکھتے ہیں۔ایک ماہ عمل کر کے دوسرے مہینے دوبارہ جرمانہ لگا دیتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ قدرتی گیس کی ترسیل بھی برائے نام ہو رہی ہے۔ناشتے،دوپہر اور شام کے کھانے کے اوقات میں بھی گیس کی بندش کی جا رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ دوماہ تک گیس کے بل نہیں بھیجے گئے اور اس ماہ بقایاجات کے ساتھ ماہوار جرمانہ بھی لگا دیا گیا ہے جو صارفین کے ساتھ زیادتی اور غیر قانونی عمل ہے۔

انہوں نے انتہائی افسوس کا اظہار کیا کہ ڈیرہ مولانا فضل الرحمن،فیصل کریم کنڈی اور علی آمین گنڈاپور ایسی طاقت ور سیاسی شخصیات کا آبائی ضلع ہونے کے باوجود بھی بنیادی سہولیات سے محروم اور سرکاری محکموں کی زیادتیوں کا شکار ہے۔انہوں نے کہا کہ عوام احتجاج کریں تو مقدمات درج کروا دیے جاتے ہیں لیکن شہریوں کو آئین و قانون کے مطابق بنیادی حقوق نہیں دیے جا رہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں