1

پاکستان، افغانستان کاعارضی داخلہ دستاویز طریقہ نافذ کرنے پر اتفاق

1800سی سی سے بڑی گاڑیوں پر ریگولیٹری ڈیوٹی 30 سے 100فیصدکرنے پر غور۔ فوٹو: فائل

1800سی سی سے بڑی گاڑیوں پر ریگولیٹری ڈیوٹی 30 سے 100فیصدکرنے پر غور۔ فوٹو: فائل

اسلام آباد:پاکستان اور افغانستان کی وزارت تجارت نے عارضی داخلہ دستاویز(ٹی اے ڈی )کے طریقہ کار کو نافذ کرنے پر اتفاق کیا ہے تاکہ دونوں ممالک کے درمیان دو طرفہ تجارت میں استعمال ہونے والی کارگو گاڑیوں کی نقل و حرکت کو منظم کیا جا سکے۔

وزارت تجارت کے اعلامیے کے مطابق افغانستان رجسٹرڈ گاڑیوںکیلیے عارضی داخلہ دستاویز کے لیے درخواستیں پاکستان ایمبیسی کابل اور پاکستان قونصلیٹ، قندھار کی ونڈو نمبر 5 پر روزانہ جمع کی جائیں گی۔

پاکستانی رجسٹرڈ گاڑیوں سے ٹی اے ڈی کے لیے درخواستیں افغانستان قونصلیٹ جنرلز، کوئٹہ اور پشاور میں جمع کی جائیں گی۔ درخواستوں کی وصولی کے بعد پانچ دنوں کے اندر عارضی داخلہ دستاویز جاری کیا جائے گا۔

فیس صرف گاڑی کا عارضی داخلہ دستاویز جاری کرنے کے لیے وصول کی جائے گی تاہم اس گاڑی کے ڈرائیورز اور کلینر کے لیے ٹی اے ڈی پاس مفت ہوگا۔ عارضی داخلہ دستاویز 100 امریکی ڈالر کے عوض جاری کیا جاتا ہے اور اس کی مدت متعدد سفروں کے ساتھ 6 ماہ کے لیے ہے۔





Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں