پہاڑ پور:بجلی کی لٹکتی تاروں سے نوجوان جاں بحق،لواحقین کا احتجاج 121

پہاڑ پور:بجلی کی لٹکتی تاروں سے نوجوان جاں بحق،لواحقین کا احتجاج

ڈیرہ اسماعیل خان (بیورورپورٹ)تھانہ بندکورائی کی حدود ٹوبہ سیم نالہ کے قریب اراضی میں چاول کاشت کرنے کے دوران نوجوان چار فٹ اونچائی سے گزرنے والے بجلی کے تار کا کرنٹ لگنے کے باعث جاں بحق ہوگیا ، لواحقین کا واپڈا آفس کا گھیراو۔

لواحقین کا نعش روڈ پر رکھ کراحتجاج،متوفی نوجوان کے والد کی رپورٹ پر لین سپرٹینڈنٹ کامران اور لین مین عبدالستار سمیت دیگر واپڈا اہلکاروں کے خلاف قتل بے سبب کا مقدمہ درج کرلیاگیا۔تھانہ بند کورائی کی حدودگاﺅں ٹوبہ سیم نالہ کے قریب چاول کی کاشت کے دوران 25سالہ عنایت اللہ ولد گل جنان قوم بلوچ سکنہ ٹوبہ اراضی میں چار فٹ اونچائی سے گزرنے والی بجلی کی مین لائن کے قریب پہنچا تو اچانک زور دار کرنٹ لگنے کے باعث موقع پرہی جاں بحق ہوگیا۔

متوفی کے لواحقین نے واپڈا کی مبینہ غفلت کیخلاف شدید احتجاج کرتے ہوئے واپڈا دفتر بند کورائی کا گھیراﺅ کرلیا اور سڑک کو آمدرفت کیلئے بند کردیا۔ اسسٹنٹ کمشنرپہاڑ پور راو ¿ انواراور پولیس کی بھاری نفری موقع پر پہنچ گئے ، کامیاب مزاکرات اور ذمہ داروں کیخلاف قانونی کاروائی کی یقین دہانی پر مظاہرین منتشر ہوگئے ۔

مقامی ذرائع کے مطابق گاﺅں ٹوبہ بندکورائی کی بجلی بقایا جات جمع نا ہونے کی وجہ سے کاٹ دی گئی تھی مگر بدقسمتی سے ایک تار میں کرنٹ موجودتھا جو متوفی کی موت کا سبب بنا۔ دوسری جانب تھانہ بند کورائی پولیس نے متوفی عنایت اللہ کے والد گل جنان کی رپورٹ پر لائن سپرنٹنڈنٹ ، ایریا لائن مین اور دیگر واپڈا اہلکاروں کیخلاف 322ppcکے تحت مقدمہ درج کرلیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں