Faisal Karim Kundi News

نیب اور حکومت میں گٹھ جوڑ ہو چکا ہے ،نیب آرڈیننس کالا قانون ہے ٌفیصل کنڈی

ڈیرہ اسماعیل خان: پاکستان پیپلز پارٹی کے مرکزی ترجمان فیصل کریم کنڈی نے کہا کہ نیب آرڈیننس کالا قانون ہے ۔ حکومت اور چیئر مین نیب کے درمیان معاہدہ ہوچکا ہے کہ سیاسی مخالفین کے خلاف مقدمات بنائے جائیں اور پی ٹی آئی کی اے ٹی ایم مشینوں کو بچایا جائے ۔


ڈیرہ اسماعیل خان میں اپنی رہائش کنڈی ماڈل فارم پر ایک پریس کا نفرنس سے خطاب کرتے ہوئے فیصل کنڈی کو کہنا تھا کہ نیب اغوا برائے تاوان کا ادارہ بن چکا ہے ، چیئر مین نیب وزیر اعظم کے اشاروں پر ناچ رہے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ ماضی میں انہوں نے نیب کو غیر جانبدار بنانے کے دعوے کرنے والوں کی صورتحال اب پوری قوم کے سامنے ہے ۔فیصل کنڈی کا کہنا تھا کہ اسی چئیر مین نیب نے بطور جج خود فیصلہ دیا تھا کی نیب چیئر مین کی مدت میں چار سال سے توسیع نہیں ہوگی اس وقت نیب ایک متنازعہ ادارہ بن چکا ہے اس کے ذریعے سیاسی مخالفین کو انتقام کا نشانہ بنایا جا رہا ہے ۔


فیصل کنڈی کا کہنا تھا کہ وقت بدلتے ٹائم نہیں لگتا کہیں ایسا نہ ہو کل یہ حکومت اس کے زیر عتاب ہو ۔عمران خان کے وزراء خود چور اور ڈاکو نکل آئے ہیں ۔ان کو بچانے کے لئے خود تحقیقاتی سیل کے ہیڈ بن گئے ہیں۔ تاکہ اپنی اے ٹی ایم مشینوں کو تحفظ فراہم کر سکیں ۔ اب چوروں کی تحقیقات خود ان کا سردار ڈاکو کرے گا ۔


ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ طالبان اے پی ایس اور شہداء کے قاتل ہیں۔ان سے ڈائیلاگ شہداء کے خون سے غداری کے مترادف ہے ۔ طالبان سے مذاکرات کے لئے کیا شہداء کی فیملیز کو ان بورڈ لیا گیا ہے ؟
ان کا کہنا تھا کہ ہم مہنگائی کے خلاف میدان عمل میں نکل چکے ہیںملک بھر میں پارٹی چیئر مین بلاول بھٹو زرداری کی کال پر احتجاجی مظاہرے کر رہے ہیں ،عمران خان نے کنٹینر دینے کا اعلان کیا تھا اب اس وعدے کو ایفا کرنے کا وقت اگیا ہے ،
ایک سوال کے جواب میں فیصل کنڈی کا کہنا تھا کہ صرف بلوچستان میں نہیں بلکہ پنجاب اور مرکز میں بھی عدم اعتماد ہونا چاہیے۔ توشہ خانہ کے حساب دیا جائے۔توشہ خانہ مال غنیمت نہیں، حضرت عمر کی مثالیں دینے والا عمران خان تحائف کی لوٹ مار میں ملوث ہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں