ڈیرہ ڈویژن میں بارشوں اور سیلاب سے نظام زندگی متاثر،تین افراد جاں بحق پانچ زخمی

ڈیرہ اسماعیل خان(احمد مصطفیٰ مغل) ڈیرہ اسماعیل خان ڈویژن میں گزشتہ دو روز سے جاری شدید بارشوں کے نتیجے میں ڈیرہ اسماعیل خان سٹی میں دو افراد جاں بحق اور پانچ زخمی ہو گئے ہیں۔ مغل کوٹ کے علاقے میں سروبی ٹاپ سے آنے والے سیلابی ریلے میں ڈیرہ ژوب روڈ پر پل بہہ گیا، جس سے بلوچستان اور خیبرپختونخوا کا رابطہ منقطع fl studio 11 torrentہوگیا ہے۔

Flood in D I Khan
ڈیرہ اسماعیل خان میں سیلاب سے کئی علاقے متاثر ہوئے ہیں ۔

ڈیرہ اسماعیل خان اور ٹانک کے اضلاع میں پہاڑوں سے آنے والا سیلابی ریلا دونوں اضلاع کے دیہی علاقوں میں داخل ہونے سے شہری بری طرح متاثر ہوئے ہیں۔ سیلاب کے باعث ٹانک اور ڈیرہ اسماعیل خان کے دیہی علاقوں کی رابطہ سڑکیں بہہ گئیں جس کی وجہ سے متعدد علاقوں کا آپس میں رابطہ منقطع ہو گیا ہے ۔ محکمہ موسمیات کے مطابق ضلع ڈیرہ اسماعیل خان میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 66 ملی میٹر سے زائد بارش ریکارڈ کی گئی ہے اور آج (جمعہ) کو بھی vray 3.6 sketchup full crackبارش کا امکان ظاہر کیا گیا ہے۔

ڈیرہ اسماعیل خان میں مسلسل دو روز بارش کے بعد کروڑوں روپے سے تعمیر کئے گئے نکاسی آب کے منصوبہ کی کلی کھل گئی

دوروزسے جاری موسلادھار بارش کے باعث ڈیرہ اورٹانک شہر کے نشیبی علاقے اوراندرون شہر کی گلیاں پانی سے بھر گئیں، کئی علاقوں میں بارش کا پانی گھروں اوردکانوں میں بھی داخل ہو گیا۔ڈی آئی خان ضلع میں سیلاب کی صورتحال کے پیش نظر ڈپٹی کمشنر ڈی آئی خان نصراللہ خان نے پورے ضلع میں دو دن (19 اگست اور 20 اگست) کے لیے تمام نجی اور سرکاری تعلیمی ادارے بند رکھنے کا حکم دیا۔ گومل زام میں پانی کی گنجائش حد سے تجاوز کرگئی جس کی وجہ سے کوٹ اعظم کے راستہ سے ٹانک میں سیلابی ریلا داخل ہوگیا ہے جبکہ دوسری جانب پائی کے دیہات بری طرح متاثر ہوئے ہیں۔ پائی گاؤں پہلے ہی مون سون کے پچھلے ماہ موسم سے آنے والے سیلاب سے متاثر ہے۔ اسی طرح درجنوں دیہات زیر آب آگئے ہیں جبکہ تحصیل پروا، درابن کلاں اورکڑی شموزئی میں سینکڑوں مکانات زمین بوس ہو گئے passfab rar download freeہیں۔

تحصیل درابن کلاں میں سیلابی کی صورتحال سے تحصٰل چیئرمین احسان اللہ خان میڈیا کو اگاہ کر رہے ہیں

پورے ڈی آئی خان ڈویژن میں موسلادھار بارش کے باعث بجلی کے متعدد فیڈر ٹرپ کرگئے، جس کے باعث ڈی آئی خان شہر کے ساتھ ساتھ کئی دیہی علاقوں میں بھی 15 گھنٹے سے بجلی کی فراہمی معطل رہی۔ ڈیرہ اسماعیل خان شہر میں بارش اور نالیوں کی بندش کے باعث سرکلر روڈ پر لیاقت پارک کی پچھلی گلی میں 5 سالہ بچہ عبدالعزیز ولد بخت زمان بھی گھر کے باہر کھیلتے ہوئے نالے میں ڈوب گیا۔ بعد ازاں مسلسل کوششوں کے بعد مقامی لوگوں اور ڈبلیو ایس ایس سی کے کارکنوں نے بچے کی لاش کو نالے سے نکال کر ہسپتال منتقل کیا جہاں وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گیا۔ جبکہ ہمت گاؤں میں طوفانی بارش سے مکان کی چھت گر گئی جس کے نتیجے میں شیخ شوکت، ان کی اہلیہ اور srs audio sandbox fullان کے تین بچے زخمی ہو گئے۔اسی طرح ڈیال روڈ پر ایک مکان کی چھت گرنے سے ایک بچہ جاں بحق ہو گیا ہے ۔

ڈیرہ اسماعیل خان میں لیاقت پارک کے عقب میں ایک بچہ نالے میں گر کر جاں بحق ہو گیا

ریسکیو 1122 کی میڈیکل ٹیم نے موقع پر پہنچ کر زخمیوں کو ابتدائی طبی امداد دینے کے بعد ہسپتال منتقل کر دیا جہاں ان کی حالت خطرے سے باہر بتائی جاتی ہے۔اسی طرح ڈیرہ بنوں روڈ پر گو پیٹرول پمپ کے قریب بارش اور پھسلن کے باعث موٹر سائیکل پر سوار بزرگ شہری موٹر سائیکل سے نیچے گر کر جاں بحق ہو گیا۔ڈیرہ اسماعیل خان ڈویژن میں بدھ کی صبح سے ہونے والی موسلا دھار بارش جمعرات کی رات طوفانی بارش میں بدل گئ جس نے پروا، درابن اور کڑی شموزئی میں تباہی مچادی۔

تحصیل چیئرمین درابن کلاں احسان اللہ میاں خیل نے بتایا کہ سیلابی پانی تحصیل درابن کلاں، موسیٰ زئی شریف روڈ اور گردونواح میں داخل ہونے کے بعد تحصیل درابن میں لاوارہ پل کو شدید خطرات لاحق ہیں۔ہم سیلاب کو کم کرنے کے لیے شہر پناہ (پروٹیکٹنگ وال) کو محفوظ بنانے کی کوشش کر رہے ہیں۔دوسری جانب تحصیل پروا کی حدود میں سیلاب پروا شہر اور نواحی دیہات چاندنہ، تلکن اور بھڑکی میں داخل ہوگیا ہے جس سے سینکڑوں مکانات کو نقصان پہنچا ہے۔ کڑی شموزئی کے درجنوں دیہات بھی زیر آب آگئے ہیں جبکہ علاقے کو دوسرے علاقوں سے ملانے والی سڑکیں ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہوگئیں جس سے کڑی شموزئی کا دیگر علاقوں سے رابطہ منقطع ہوگیا ہے۔ موسلا دھار بارش کے باعث ڈویژن بھر میں بجلی اور مواصلات کا نظام درہم برہم ہو گیا جب کہ سیلاب سے متاثرہ کئی علاقوں میں ٹوٹی پھوٹی سڑکوں کے باعث امدادی سرگرمیوں میں مشکلات کا سامنا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں