17

مہنگائی کی وجہ سے ہر کوئی ذہنی مریض بن گیا ہے، سراج الحق

امیرجماعت اسلامی نے کہا ہے کہ مہنگائی کی وجہ سے ہر کوئی ذہنی مریض بن گیا ہے، بجلی کے بلوں میں اضافے سے ایک درجن سے زائدافراد خودکشی کرچکے ہیں۔ بنگلہ دیش، ترکی اور بھارت ترقی اور ہم تنزلی کی جانب جا رہے ہیں۔

مہنگائی کے خلاف جماعت اسلامی نے گورنرہاؤس کے سامنے دھرنا دیا، سراج الحق کا خطاب میں کہنا تھا کہ ہمارا دشمن بھارت چاند پر پہنچ گیا، ہم آٹا اور چینی کیلئے سڑک پر بیٹھے ہیں۔ شدید مہنگائی کی وجہ سے جسم اور جان کا رشتہ مشکل ہوگیا ہے۔

پاکستان میں گندم، معدنیات سب کچھ وافرمقدار میں موجود ہے۔ اس کے باوجود مہنگائی کی وجہ سےعوام خرید نہیں سکتے۔ آج ہمارا قومی نشان کشکول بن گیا ہے۔ کسی نے 50 لاکھ گھر کا اعلان کیا۔

انھوں نے کہا کہ کسی نے روٹی کپڑا مکان کے نام پر لوٹا۔ کسی نے حقیقی تبدیلی کا نعرہ لگایا، کسی نے کہا ایشین ٹائیگر بناؤں گا۔ میری لڑائی کسی فرد سے نہیں بلکہ یہ ظلم، جہالت، بدامنی اور کرپشن کے خلاف ہے۔

امیر جماعت اسلامی نے کہا کہ پاکستان کےنئےچیف جسٹس کو25کروڑعوام کاپیغام دیناچاہتاہوں۔ نئے چیف جسٹس اچھے تجربہ کار جج رہے ہیں، امید ہے کہ عدل و انصاف کا ترازو بلند کریں گے۔

سراج الحق نے کہا کہ بلاول بھٹو نے کراچی سے لانگ مارچ شروع کیا تھا۔ مولانا فضل الرحمان نے مہنگائی مارچ کیا۔ اسحاق ڈار سے اسدعمر تک سب نے ایک ہی کام کیا، آئی ایم ایف کے در پر بیٹھ گئے۔

انھوں نے کہا کہ ہماری نجات آئی ایم ایف کے پاس نہیں، اللہ اور رسول کے راستے پر چلنے میں ہے، آئی ایم ایف ہمارا خدا نہیں ہے، ہم اس سے بغاوت کا اعلان کرتے ہیں۔

امیرجماعت اسلامی نے کہا کہ وزیراعظم کہتا ہے ہم نے آئی ایم ایف کے کہنے پر بجلی کے بلوں میں اضافہ کیا۔ وزیراعظم کہتا ہے بجلی بلوں میں اقساط کے لیے آئی ایم ایف سے بات کروں گا۔ جو وزیراعظم عوام کو ریلیف کے لیے آئی ایم ایف سے اجازت لے اسے نہیں مانتے۔

ان کا کہنا تھا کہ نااہل اور آئی ایم ایف کے غلام حکمرانوں کی وجہ سے معاشی نظام تباہ ہوگیا۔ 16 ماہ عوام کے ساتھ کیا کھیل کھیلا گیا آج تک کسی نے جواب نہیں دیا۔

سراج الحق نے کہا کہ چاہتا ہوں ملک میں کرپشن، بےروزگاری، جہالت اور استحصال کا خاتمہ ہو۔ اقوام عالم میں پاکستان کو بلند دیکھنا چاہتا ہوں۔ ہماری یہ تحریک اورمہم جاری رہےگی۔ رحیم یارخان، لیہ، مظفرگڑھ اور فیصل آباد کے بعد ہم یہاں پر بیٹھے ہیں، ہماری کوئی ذاتی لڑائی نہیں، ہم نے کوئی قرض لے کر ہڑپ نہیں کیا۔

امیرجماعت اسلامی سراج الحق کا کہنا تھا کہ میرے کسی کارکن کا نام پانامہ، نیب اور توشہ خانہ کیس میں نہیں ہے۔

Comments





Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں


Notice: Undefined index: HTTP_CLIENT_IP in /home/aitakvua/public_html/news/wp-content/themes/upaper/functions.php on line 296